آٹو

پنجاب ایکسائز نے آخرکار سمارٹ کارڈز کی فراہمی شروع کر دی۔

محکمہ ایکسائز، ٹیکسیشن اور نارکوٹکس کنٹرول پنجاب نے اعلان کیا ہے کہ تاخیر سے آنے والے سمارٹ کارڈز کی پرینٹنگ شروع کر دی گئی ہے۔ ٹویٹ میں، محکمہ نے یقین دہانی کرائی کہ چند ہفتوں کے اندر تمام کارڈ درخواست دہندگان کو فراہم کر دیے جائیں گے۔

ٹویٹ میں مزید کہا گیا کہ پوسٹ آفس سے سمارٹ کارڈز کی روزانہ ترسیل شروع ہو گئی ہے۔ اس نے مزید کہا کہ تمام بقایا سمارٹ کارڈ اگلے چند ہفتوں میں بھیجے جائیں گے۔ یہ ٹویٹ محکمہ ایکسائز پنجاب کے ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل کی جانب سے شائع کیا گیا۔

صوبائی حکومت نے 2018 میں آٹوموبائل کے لیے سمارٹ کارڈز کا اجراء کیا۔ تاہم، سسٹم میں متعدد خرابیاں پیدا ہوئیں، جس کی وجہ سے تقسیم میں تاخیر ہوئی۔ جنوری 2020 تک، محکمہ کے پاس 50,000 زیر التواء درخواستوں کی فہرست تھی۔

2023 میں، محکمہ ایکسائز نے بالآخر سمارٹ کارڈز کی تاخیر سے تقسیم کی اطلاع دی اور شہریوں کو یقین دلایا کہ انہیں ان کے کارڈ جلد مل جائیں گے۔

ڈرون ٹیکنالوجی کا استعمال

لاہور سٹی ٹریفک پولیس (CTP) نے معمول کی ٹریفک کی نگرانی اور نگرانی کے لیے ڈرون کیمروں کا استعمال شروع کر دیا ہے۔ محکمہ نے ڈرون نگرانی پر نظر رکھنے کے لیے ایک مانیٹرنگ اور سرویلنس یونٹ قائم کیا ہے۔

ڈرون کیمرے روڈ انجینئرنگ کے مسائل، تجاوزات، یک طرفہ ٹریفک کی خلاف ورزیوں اور غلط پارکنگ کو بھی پکڑیں گے اور رپورٹ کریں گے۔ چیف ٹریفک آفیسر (سی ٹی او) ڈاکٹر اسد ملہی نے کہا کہ ڈرون مانیٹرنگ سے ٹریفک مینجمنٹ میں بہتری آئے گی۔

اس ٹیکنالوجی کے ذریعے ملہی نے نگرانی کی اور ہال روڈ، مال روڈ، داتا دربار اور شاہ عالم مارکیٹ پر تجاوزات اور غیر مناسب پارکنگ جیسے مسائل کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا۔ جلد ہی نئی ٹیکنالوجی کو پورے شہر میں لاگو کر دیا جائے گا۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button