ٹیک اور ٹیلی کامخبریں

گوگل باضابطہ طور پر پاکستان میں ایک کمپنی کے طور پر رجسٹرڈ ہے۔

امریکی ٹیکنالوجی کمپنی گوگل نے خود کو سیکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن آف پاکستان (SECP) میں ایک کمپنی کے طور پر رجسٹر کرالیا ہے۔

ذرائع نے خصوصی طور پر بتایا کہ ایس ای سی پی نے کمپنیز ایکٹ 2017 کے سیکشن 435 کے تحت گوگل کو رجسٹریشن کا سرٹیفکیٹ جاری کیا ہے۔

ProPakistani کے پاس دستیاب دستاویزات کے مطابق، Google Asia Pacific Pte. لمیٹڈ کو پاکستان میں رابطہ دفتر قائم کرنے کے لیے کمپنیز ایکٹ 2017 کے تحت رجسٹر کیا گیا ہے۔

ذرائع کے مطابق گوگل ایس ای سی پی میں رجسٹریشن کے بعد بہت جلد پاکستان میں اپنا کام شروع کردے گا۔ گوگل کا ایک وفد اگلے ہفتے پاکستان آنے والا پاکستانی حکام سے ملاقات کرے گا اور پاکستان میں اس کے آپریشنز پر بات کرے گا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی اینڈ ٹیلی کمیونیکیشن (MoITT) بین الاقوامی کمپنیوں سے رابطے میں تھی اور انہیں پاکستان لانے کی بھرپور کوشش کر رہی تھی تاہم سیاسی عدم استحکام کے باعث کمپنیاں ہچکچا رہی تھیں۔

تاہم اس حوالے سے ایک پیش رفت سامنے آئی ہے جس میں پہلے گوگل اور پھر ٹک ٹاک نے پاکستان میں دفاتر قائم کرنے پر رضامندی ظاہر کی ہے جب کہ وزارت کے درمیان فیس بک کے ساتھ بات چیت جاری ہے۔

وزارت آئی ٹی کے حکام پر امید ہیں کہ گوگل آئندہ چند دنوں میں پاکستان میں اپنا دفتر قائم کر لے گا۔ MoITT حکام کے مطابق، گوگل نے حالیہ برسوں میں پاکستان میں کئی اقدامات شروع کیے ہیں۔

ستمبر میں گوگل نے تمام پاکستانیوں کو سیکھنے کے لچکدار راستے پیش کرنے کے لیے کیریئر سرٹیفیکیشنز کا آغاز کیا۔ جون 2022 میں، گوگل نے خودکشی کے واقعات اور ذہنی صحت کے مسائل سے نمٹنے کے لیے پاکستان میں خودکشی کی ہاٹ لائن شروع کی۔

ایم او آئی ٹی ٹی کے اہلکار نے کہا کہ گوگل کی بطور کمپنی پاکستان میں رجسٹریشن ایک اچھی علامت ہے۔ گوگل گوگل سرٹیفیکیشن پروگرام میں 3.5 ملین ڈالر کی سرمایہ کاری کر رہا ہے اور SECP کے ساتھ رجسٹریشن کا مطلب ہے کہ کمپنی مزید سرمایہ کاری کرنا چاہتی ہے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button